Surah Adh-Dhariyat With Urdu Translation and MP3

سورة الذاريات

Read Surah Adh-Dhariyat with Urdu Translation - Surah Adh-Dhariyat is Meccan Surah and also called Makki Surah of Quran e Pak. You can read Surah Adh-Dhariyat with Urdu Translation and download mp3 Surah Adh-Dhariyat in your mobile and WhatsApp with voice of Surah Adh-Dhariyat Recited by Sheikh Abdur Rahman Al-Sudais & Sheikh Su'ud As-Shuraim. Read and Download Adh-Dhariyat Ayat by Ayat in Urdu Translation and Tafseer.
Para / Chapter 26 - 27
Surah Name Adh-Dhariyat
Classification Meccan - Makki Surah
Surah No. 51
Reciter Surah Adh-Dhariyat Recited By Sheikh Abdur Rahman Al-Sudais & Sheikh Su'ud As-Shuraim
Download Click here to Download Surah Adh-Dhariyat Audio MP3

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

﴿۱﴾ بکھیرنے والیوں کی قسم جو اُڑا کر بکھیر دیتی ہیں

﴿۲﴾ پھر (پانی کا) بوجھ اٹھاتی ہیں

﴿۳﴾ پھر آہستہ آہستہ چلتی ہیں

﴿۴﴾ پھر چیزیں تقسیم کرتی ہیں

﴿۵﴾ کہ جس چیز کا تم سے وعدہ کیا جاتا ہے وہ سچا ہے

﴿۶﴾ اور انصاف (کا دن) ضرور واقع ہوگا

﴿۷﴾ اور آسمان کی قسم جس میں رسے ہیں

﴿۸﴾ کہ (اے اہل مکہ) تم ایک متناقض بات میں (پڑے ہوئے) ہو

﴿۹﴾ اس سے وہی پھرتا ہے جو (خدا کی طرف سے) پھیرا جائے

﴿۱۰﴾ اٹکل دوڑانے والے ہلاک ہوں

﴿۱۱﴾ جو بےخبری میں بھولے ہوئے ہیں

﴿۱۲﴾ پوچھتے ہیں کہ جزا کا دن کب ہوگا؟

﴿۱۳﴾ اُس دن (ہوگا) جب ان کو آگ میں عذاب دیا جائے گا

﴿۱۴﴾ اب اپنی شرارت کا مزہ چکھو۔ یہ وہی ہے جس کے لئے تم جلدی مچایا کرتے تھے

﴿۱۵﴾ بےشک پرہیزگار بہشتوں اور چشموں میں (عیش کر رہے) ہوں گے

﴿۱۶﴾ اور) جو جو (نعمتیں) ان کا پروردگار انہیں دیتا ہوگا ان کو لے رہے ہوں گے۔ بےشک وہ اس سے پہلے نیکیاں کرتے تھے

﴿۱۷﴾ رات کے تھوڑے سے حصے میں سوتے تھے

﴿۱۸﴾ اور اوقات سحر میں بخشش مانگا کرتے تھے

﴿۱۹﴾ اور ان کے مال میں مانگنے والے اور نہ مانگنے والے (دونوں) کا حق ہوتا تھا

﴿۲۰﴾ اور یقین کرنے والوں کے لئے زمین میں (بہت سی) نشانیاں ہیں

﴿۲۱﴾ اور خود تمہارے نفوس میں تو کیا تم دیکھتے نہیں؟

﴿۲۲﴾ اور تمہارا رزق اور جس چیز کا تم سے وعدہ کیا جاتا ہے آسمان میں ہے

﴿۲۳﴾ تو آسمانوں اور زمین کے مالک کی قسم! یہ (اسی طرح) قابل یقین ہے جس طرح تم بات کرتے ہو

﴿۲۴﴾ بھلا تمہارے پاس ابراہیمؑ کے معزز مہمانوں کی خبر پہنچی ہے؟

﴿۲۵﴾ جب وہ ان کے پاس آئے تو سلام کہا۔ انہوں نے بھی (جواب میں) سلام کہا (دیکھا تو) ایسے لوگ کہ نہ جان نہ پہچان

﴿۲۶﴾ تو اپنے گھر جا کر ایک (بھنا ہوا) موٹا بچھڑا لائے

﴿۲۷﴾ (اور کھانے کے لئے) ان کے آگے رکھ دیا۔ کہنے لگے کہ آپ تناول کیوں نہیں کرتے؟

﴿۲۸﴾ اور دل میں ان سے خوف معلوم کیا۔ (انہوں نے) کہا کہ خوف نہ کیجیئے۔ اور ان کو ایک دانشمند لڑکے کی بشارت بھی سنائی

﴿۲۹﴾ تو ابراہیمؑ کی بیوی چلاّتی آئی اور اپنا منہ پیٹ کر کہنے لگی کہ (اے ہے ایک تو) بڑھیا اور (دوسرے) بانجھ

﴿۳۰﴾ (انہوں نے) کہا (ہاں) تمہارے پروردگار نے یوں ہی فرمایا ہے۔ وہ بےشک صاحبِ حکمت (اور) خبردار ہے

﴿۳۱﴾ ابراہیمؑ نے کہا کہ فرشتو! تمہارا مدعا کیا ہے؟

﴿۳۲﴾ انہوں نے کہا کہ ہم گنہگار لوگوں کی طرف بھیجے گئے ہیں

﴿۳۳﴾ تاکہ ان پر کھنگر برسائیں

﴿۳۴﴾ جن پر حد سے بڑھ جانے والوں کے لئے تمہارے پروردگار کے ہاں سے نشان کردیئے گئے ہیں

﴿۳۵﴾ تو وہاں جتنے مومن تھے ان کو ہم نے نکال لیا

﴿۳۶﴾ اور اس میں ایک گھر کے سوا مسلمانوں کا کوئی گھر نہ پایا

﴿۳۷﴾ اور جو لوگ عذاب الیم سے ڈرتے ہیں ان کے لئے وہاں نشانی چھوڑ دی

﴿۳۸﴾ اور موسیٰ (کے حال) میں (بھی نشانی ہے) جب ہم نے ان کو فرعون کی طرف کھلا ہوا معجزہ دے کر بھیجا

﴿۳۹﴾ تو اس نے اپنی جماعت (کے گھمنڈ) پر منہ موڑ لیا اور کہنے لگا یہ تو جادوگر ہے یا دیوانہ

﴿۴۰﴾ تو ہم نے اس کو اور اس کے لشکروں کو پکڑ لیا اور ان کو دریا میں پھینک دیا اور وہ کام ہی قابل ملامت کرتا تھا

﴿۴۱﴾ اور عاد (کی قوم کے حال) میں بھی (نشانی ہے) جب ہم نے ان پر نامبارک ہوا چلائی

﴿۴۲﴾ وہ جس چیز پر چلتی اس کو ریزہ ریزہ کئے بغیر نہ چھوڑتی

﴿۴۳﴾ اور (قوم) ثمود (کے حال) میں (نشانی ہے) جب ان سے کہا گیا کہ ایک وقت تک فائدہ اٹھالو

﴿۴۴﴾ تو انہوں نے اپنے پروردگار کے حکم سے سرکشی کی۔ سو ان کو کڑک نے آ پکڑا اور وہ دیکھ رہے تھے

﴿۴۵﴾ پھر وہ نہ تو اُٹھنے کی طاقت رکھتے تھے اور نہ مقابلہ ہی کرسکتے تھے

﴿۴۶﴾ اور اس سے پہلے (ہم) نوح کی قوم کو (ہلاک کرچکے تھے) بےشک وہ نافرمان لوگ تھے

﴿۴۷﴾ اور آسمانوں کو ہم ہی نے ہاتھوں سے بنایا اور ہم کو سب مقدور ہے

﴿۴۸﴾ اور زمین کو ہم ہی نے بچھایا تو (دیکھو) ہم کیا خوب بچھانے والے ہیں

﴿۴۹﴾ اور ہر چیز کی ہم نے دو قسمیں بنائیں تاکہ تم نصیحت پکڑو

﴿۵۰﴾ تو تم لوگ خدا کی طرف بھاگ چلو میں اس کی طرف سے تم کو صریح رستہ بتانے والا ہوں

﴿۵۱﴾ اور خدا کے ساتھ کسی اَور کو معبود نہ بناؤ۔ میں اس کی طرف سے تم کو صریح رستہ بتانے والا ہوں

﴿۵۲﴾ اسی طرح ان سے پہلے لوگوں کے پاس جو پیغمبر آتا وہ اس کو جادوگر یا دیوانہ کہتے

﴿۵۳﴾ کیا یہ کہ ایک دوسرے کو اسی بات کی وصیت کرتے آئے ہیں بلکہ یہ شریر لوگ ہیں

﴿۵۴﴾ تو ان سے اعراض کرو۔ تم کو (ہماری) طرف سے ملامت نہ ہوگی

﴿۵۵﴾ اور نصیحت کرتے رہو کہ نصیحت مومنوں کو نفع دیتی ہے

﴿۵۶﴾ اور میں نے جنوں اور انسانوں کو اس لئے پیدا کیا ہے کہ میری عبادت کریں

﴿۵۷﴾ میں ان سے طالب رزق نہیں اور نہ یہ چاہتا ہوں کہ مجھے (کھانا) کھلائیں

﴿۵۸﴾ خدا ہی تو رزق دینے والا زور آور اور مضبوط ہے

﴿۵۹﴾ کچھ شک نہیں کہ ان ظالموں کے لئے بھی (عذاب کی) نوبت مقرر ہے جس طرح ان کے ساتھیوں کی نوبت تھی تو ان کو مجھ سے (عذاب) جلدی نہیں طلب کرنا چاہیئے

﴿۶۰﴾ جس دن کا ان کافروں سے وعدہ کیا جاتا ہے اس سے ان کے لئے خرابی ہے

﴿۱﴾ بکھیرنے والیوں کی قسم جو اُڑا کر بکھیر دیتی ہیں

﴿۲﴾ پھر (پانی کا) بوجھ اٹھاتی ہیں

﴿۳﴾ پھر آہستہ آہستہ چلتی ہیں

﴿۴﴾ پھر چیزیں تقسیم کرتی ہیں

﴿۵﴾ کہ جس چیز کا تم سے وعدہ کیا جاتا ہے وہ سچا ہے

﴿۶﴾ اور انصاف (کا دن) ضرور واقع ہوگا

﴿۷﴾ اور آسمان کی قسم جس میں رسے ہیں

﴿۸﴾ کہ (اے اہل مکہ) تم ایک متناقض بات میں (پڑے ہوئے) ہو

﴿۹﴾ اس سے وہی پھرتا ہے جو (خدا کی طرف سے) پھیرا جائے

﴿۱۰﴾ اٹکل دوڑانے والے ہلاک ہوں

﴿۱۱﴾ جو بےخبری میں بھولے ہوئے ہیں

﴿۱۲﴾ پوچھتے ہیں کہ جزا کا دن کب ہوگا؟

﴿۱۳﴾ اُس دن (ہوگا) جب ان کو آگ میں عذاب دیا جائے گا

﴿۱۴﴾ اب اپنی شرارت کا مزہ چکھو۔ یہ وہی ہے جس کے لئے تم جلدی مچایا کرتے تھے

﴿۱۵﴾ بےشک پرہیزگار بہشتوں اور چشموں میں (عیش کر رہے) ہوں گے

﴿۱۶﴾ اور) جو جو (نعمتیں) ان کا پروردگار انہیں دیتا ہوگا ان کو لے رہے ہوں گے۔ بےشک وہ اس سے پہلے نیکیاں کرتے تھے

﴿۱۷﴾ رات کے تھوڑے سے حصے میں سوتے تھے

﴿۱۸﴾ اور اوقات سحر میں بخشش مانگا کرتے تھے

﴿۱۹﴾ اور ان کے مال میں مانگنے والے اور نہ مانگنے والے (دونوں) کا حق ہوتا تھا

﴿۲۰﴾ اور یقین کرنے والوں کے لئے زمین میں (بہت سی) نشانیاں ہیں

﴿۲۱﴾ اور خود تمہارے نفوس میں تو کیا تم دیکھتے نہیں؟

﴿۲۲﴾ اور تمہارا رزق اور جس چیز کا تم سے وعدہ کیا جاتا ہے آسمان میں ہے

﴿۲۳﴾ تو آسمانوں اور زمین کے مالک کی قسم! یہ (اسی طرح) قابل یقین ہے جس طرح تم بات کرتے ہو

﴿۲۴﴾ بھلا تمہارے پاس ابراہیمؑ کے معزز مہمانوں کی خبر پہنچی ہے؟

﴿۲۵﴾ جب وہ ان کے پاس آئے تو سلام کہا۔ انہوں نے بھی (جواب میں) سلام کہا (دیکھا تو) ایسے لوگ کہ نہ جان نہ پہچان

﴿۲۶﴾ تو اپنے گھر جا کر ایک (بھنا ہوا) موٹا بچھڑا لائے

﴿۲۷﴾ (اور کھانے کے لئے) ان کے آگے رکھ دیا۔ کہنے لگے کہ آپ تناول کیوں نہیں کرتے؟

﴿۲۸﴾ اور دل میں ان سے خوف معلوم کیا۔ (انہوں نے) کہا کہ خوف نہ کیجیئے۔ اور ان کو ایک دانشمند لڑکے کی بشارت بھی سنائی

﴿۲۹﴾ تو ابراہیمؑ کی بیوی چلاّتی آئی اور اپنا منہ پیٹ کر کہنے لگی کہ (اے ہے ایک تو) بڑھیا اور (دوسرے) بانجھ

﴿۳۰﴾ (انہوں نے) کہا (ہاں) تمہارے پروردگار نے یوں ہی فرمایا ہے۔ وہ بےشک صاحبِ حکمت (اور) خبردار ہے

﴿۳۱﴾ ابراہیمؑ نے کہا کہ فرشتو! تمہارا مدعا کیا ہے؟

﴿۳۲﴾ انہوں نے کہا کہ ہم گنہگار لوگوں کی طرف بھیجے گئے ہیں

﴿۳۳﴾ تاکہ ان پر کھنگر برسائیں

﴿۳۴﴾ جن پر حد سے بڑھ جانے والوں کے لئے تمہارے پروردگار کے ہاں سے نشان کردیئے گئے ہیں

﴿۳۵﴾ تو وہاں جتنے مومن تھے ان کو ہم نے نکال لیا

﴿۳۶﴾ اور اس میں ایک گھر کے سوا مسلمانوں کا کوئی گھر نہ پایا

﴿۳۷﴾ اور جو لوگ عذاب الیم سے ڈرتے ہیں ان کے لئے وہاں نشانی چھوڑ دی

﴿۳۸﴾ اور موسیٰ (کے حال) میں (بھی نشانی ہے) جب ہم نے ان کو فرعون کی طرف کھلا ہوا معجزہ دے کر بھیجا

﴿۳۹﴾ تو اس نے اپنی جماعت (کے گھمنڈ) پر منہ موڑ لیا اور کہنے لگا یہ تو جادوگر ہے یا دیوانہ

﴿۴۰﴾ تو ہم نے اس کو اور اس کے لشکروں کو پکڑ لیا اور ان کو دریا میں پھینک دیا اور وہ کام ہی قابل ملامت کرتا تھا

﴿۴۱﴾ اور عاد (کی قوم کے حال) میں بھی (نشانی ہے) جب ہم نے ان پر نامبارک ہوا چلائی

﴿۴۲﴾ وہ جس چیز پر چلتی اس کو ریزہ ریزہ کئے بغیر نہ چھوڑتی

﴿۴۳﴾ اور (قوم) ثمود (کے حال) میں (نشانی ہے) جب ان سے کہا گیا کہ ایک وقت تک فائدہ اٹھالو

﴿۴۴﴾ تو انہوں نے اپنے پروردگار کے حکم سے سرکشی کی۔ سو ان کو کڑک نے آ پکڑا اور وہ دیکھ رہے تھے

﴿۴۵﴾ پھر وہ نہ تو اُٹھنے کی طاقت رکھتے تھے اور نہ مقابلہ ہی کرسکتے تھے

﴿۴۶﴾ اور اس سے پہلے (ہم) نوح کی قوم کو (ہلاک کرچکے تھے) بےشک وہ نافرمان لوگ تھے

﴿۴۷﴾ اور آسمانوں کو ہم ہی نے ہاتھوں سے بنایا اور ہم کو سب مقدور ہے

﴿۴۸﴾ اور زمین کو ہم ہی نے بچھایا تو (دیکھو) ہم کیا خوب بچھانے والے ہیں

﴿۴۹﴾ اور ہر چیز کی ہم نے دو قسمیں بنائیں تاکہ تم نصیحت پکڑو

﴿۵۰﴾ تو تم لوگ خدا کی طرف بھاگ چلو میں اس کی طرف سے تم کو صریح رستہ بتانے والا ہوں

﴿۵۱﴾ اور خدا کے ساتھ کسی اَور کو معبود نہ بناؤ۔ میں اس کی طرف سے تم کو صریح رستہ بتانے والا ہوں

﴿۵۲﴾ اسی طرح ان سے پہلے لوگوں کے پاس جو پیغمبر آتا وہ اس کو جادوگر یا دیوانہ کہتے

﴿۵۳﴾ کیا یہ کہ ایک دوسرے کو اسی بات کی وصیت کرتے آئے ہیں بلکہ یہ شریر لوگ ہیں

﴿۵۴﴾ تو ان سے اعراض کرو۔ تم کو (ہماری) طرف سے ملامت نہ ہوگی

﴿۵۵﴾ اور نصیحت کرتے رہو کہ نصیحت مومنوں کو نفع دیتی ہے

﴿۵۶﴾ اور میں نے جنوں اور انسانوں کو اس لئے پیدا کیا ہے کہ میری عبادت کریں

﴿۵۷﴾ میں ان سے طالب رزق نہیں اور نہ یہ چاہتا ہوں کہ مجھے (کھانا) کھلائیں

﴿۵۸﴾ خدا ہی تو رزق دینے والا زور آور اور مضبوط ہے

﴿۵۹﴾ کچھ شک نہیں کہ ان ظالموں کے لئے بھی (عذاب کی) نوبت مقرر ہے جس طرح ان کے ساتھیوں کی نوبت تھی تو ان کو مجھ سے (عذاب) جلدی نہیں طلب کرنا چاہیئے

﴿۶۰﴾ جس دن کا ان کافروں سے وعدہ کیا جاتا ہے اس سے ان کے لئے خرابی ہے

Surah Adh-Dhariyat Tafseer in Urdu Audio MP3

Browse Surah Adh-Dhariyat Ayat by Ayat - سورة الذاريات کی مزید آیات

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 1

سورة الذاريات آیت نمبر 1

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 2

سورة الذاريات آیت نمبر 2

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 3

سورة الذاريات آیت نمبر 3

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 4

سورة الذاريات آیت نمبر 4

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 5

سورة الذاريات آیت نمبر 5

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 6

سورة الذاريات آیت نمبر 6

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 7

سورة الذاريات آیت نمبر 7

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 8

سورة الذاريات آیت نمبر 8

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 9

سورة الذاريات آیت نمبر 9

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 10

سورة الذاريات آیت نمبر 10

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 11

سورة الذاريات آیت نمبر 11

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 12

سورة الذاريات آیت نمبر 12

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 13

سورة الذاريات آیت نمبر 13

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 14

سورة الذاريات آیت نمبر 14

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 15

سورة الذاريات آیت نمبر 15

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 16

سورة الذاريات آیت نمبر 16

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 17

سورة الذاريات آیت نمبر 17

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 18

سورة الذاريات آیت نمبر 18

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 19

سورة الذاريات آیت نمبر 19

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 20

سورة الذاريات آیت نمبر 20

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 21

سورة الذاريات آیت نمبر 21

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 22

سورة الذاريات آیت نمبر 22

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 23

سورة الذاريات آیت نمبر 23

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 24

سورة الذاريات آیت نمبر 24

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 25

سورة الذاريات آیت نمبر 25

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 26

سورة الذاريات آیت نمبر 26

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 27

سورة الذاريات آیت نمبر 27

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 28

سورة الذاريات آیت نمبر 28

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 29

سورة الذاريات آیت نمبر 29

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 30

سورة الذاريات آیت نمبر 30

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 31

سورة الذاريات آیت نمبر 31

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 32

سورة الذاريات آیت نمبر 32

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 33

سورة الذاريات آیت نمبر 33

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 34

سورة الذاريات آیت نمبر 34

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 35

سورة الذاريات آیت نمبر 35

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 36

سورة الذاريات آیت نمبر 36

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 37

سورة الذاريات آیت نمبر 37

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 38

سورة الذاريات آیت نمبر 38

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 39

سورة الذاريات آیت نمبر 39

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 40

سورة الذاريات آیت نمبر 40

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 41

سورة الذاريات آیت نمبر 41

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 42

سورة الذاريات آیت نمبر 42

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 43

سورة الذاريات آیت نمبر 43

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 44

سورة الذاريات آیت نمبر 44

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 45

سورة الذاريات آیت نمبر 45

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 46

سورة الذاريات آیت نمبر 46

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 47

سورة الذاريات آیت نمبر 47

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 48

سورة الذاريات آیت نمبر 48

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 49

سورة الذاريات آیت نمبر 49

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 50

سورة الذاريات آیت نمبر 50

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 51

سورة الذاريات آیت نمبر 51

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 52

سورة الذاريات آیت نمبر 52

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 53

سورة الذاريات آیت نمبر 53

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 54

سورة الذاريات آیت نمبر 54

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 55

سورة الذاريات آیت نمبر 55

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 56

سورة الذاريات آیت نمبر 56

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 57

سورة الذاريات آیت نمبر 57

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 58

سورة الذاريات آیت نمبر 58

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 59

سورة الذاريات آیت نمبر 59

سورة الذاريات Surah Adh-Dhariyat Ayat No 60

سورة الذاريات آیت نمبر 60

Your Comments/Thoughts ?

Read & Listen Surah Adh-Dhariyat with Urdu Translation سورة الذاريات - Download Surah Adh-Dhariyat MP3 Audio Quran Online Free. Adh-Dhariyat Urdu translation by Moulana Fateh Muhammad Jalandari. Read Surah Adh-Dhariyat with Urdu translation, tilawat by Shaikh Abd-ur Rahman As-Sudais & Shaikh Su'ood As-Shuraim with Urdu translation text.

  • Surah No: 51
  • Adh-Dhariyat
  • Arabic: سورة الذاريات
  • (سورة الذاريات) Adh-Dhariyat Meaning in English: The Winnowing Winds
  • سورة الذاريات اردو میں
  • سورة الذاريات mp3
  • سورة الذاريات pdf

Read Quran Urdu Tarjuma with free download Holy Quran Urdu PDF. Moreover, you can also read and listen Quran Urdu tafseer by great Scholars at Darsaal. Quran Tilawat videos are also available here.