ابھی گناہ کا موسم ہے آ شباب میں آ

ابھی گناہ کا موسم ہے آ شباب میں آ

نشہ اترنے سے پہلے مری شراب میں آ

دھنک سی خواب سی خوشبو سی پھر برس مجھ پر

نئی غزل کی طرح تو مری کتاب میں آ

اٹھا نہ دیر تک احسان موسم گل کا

میں زندگی ہوں مجھے جی مرے عذاب میں آ

وہ میرے لب کے پرندے وہ تیرا جھیل بدن

بجھا نہ پیاس مری تو مگر سراب میں آ

ترے دریچے سے ہے دور میرا دروازہ

اگر تو درد ہے میرا تو دل کے باب میں آ

میں تجھ کو جاگتی آنکھوں سے چھو سکوں نہ کبھی

مری انا کا بھرم رکھ لے میرے خواب میں آ

(630) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Abhi Gunah Ka Mausam Hai Aa Shabab Mein Aa In Urdu By Famous Poet Abdullah Kamal. Abhi Gunah Ka Mausam Hai Aa Shabab Mein Aa is written by Abdullah Kamal. Enjoy reading Abhi Gunah Ka Mausam Hai Aa Shabab Mein Aa Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Abdullah Kamal. Free Dowlonad Abhi Gunah Ka Mausam Hai Aa Shabab Mein Aa by Abdullah Kamal in PDF.