اول اول کی دوستی ہے ابھی

اول اول کی دوستی ہے ابھی

اک غزل ہے کہ ہو رہی ہے ابھی

میں بھی شہر وفا میں نو وارد

وہ بھی رک رک کے چل رہی ہے ابھی

میں بھی ایسا کہاں کا زود شناس

وہ بھی لگتا ہے سوچتی ہے ابھی

دل کی وارفتگی ہے اپنی جگہ

پھر بھی کچھ احتیاط سی ہے ابھی

گرچہ پہلا سا اجتناب نہیں

پھر بھی کم کم سپردگی ہے ابھی

کیسا موسم ہے کچھ نہیں کھلتا

بوندا باندی بھی دھوپ بھی ہے ابھی

خود کلامی میں کب یہ نشہ تھا

جس طرح روبرو کوئی ہے ابھی

قربتیں لاکھ خوبصورت ہوں

دوریوں میں بھی دل کشی ہے ابھی

فصل گل میں بہار پہلا گلاب

کس کی زلفوں میں ٹانکتی ہے ابھی

مدتیں ہو گئیں فرازؔ مگر

وہ جو دیوانگی کہ تھی ہے ابھی

(1155) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Awwal Awwal Ki Dosti Hai Abhi In Urdu By Famous Poet Ahmad Faraz. Awwal Awwal Ki Dosti Hai Abhi is written by Ahmad Faraz. Enjoy reading Awwal Awwal Ki Dosti Hai Abhi Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Ahmad Faraz. Free Dowlonad Awwal Awwal Ki Dosti Hai Abhi by Ahmad Faraz in PDF.