خرد سے راہرو روشن بصر ہے

خرد سے راہرو روشن بصر ہے

خرد کیا ہے؟ چراغ رہ گزر ہے

درون خانہ ہنگامے ہیں کیا کیا

چراغ رہ گزر کو کیا خبر ہے

(824) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

KHirad Se Rah-rau Raushan-basar Hai In Urdu By Famous Poet Allama Iqbal. KHirad Se Rah-rau Raushan-basar Hai is written by Allama Iqbal. Enjoy reading KHirad Se Rah-rau Raushan-basar Hai Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Allama Iqbal. Free Dowlonad KHirad Se Rah-rau Raushan-basar Hai by Allama Iqbal in PDF.