رنگ جو خوشبو نہ تھا

وادئ مجنوں میں

آبروئے خون میں

روئے سر شار و حسیں

منظر شب کے قریں

میں تمہیں ترتیب دوں

قرب کی ترغیب دوں

عکس کی تعریف میں

رسم کی تحریف میں

ایک افسانہ کہوں

صبح تک جلتا رہا ہوں

تم خرام ناز سے

نطق و لب کے ساز سے

مرگ آسا جاں بہ لب

جادۂ تاریک جب

زندہ و روشن کرو

اور لہرا کر چلو

قتل کر دینا اسے

عکس جو تم سا نہ تھا

حرف جو مجھ سا نہ تھا

جذب شعلۂ خو نہ تھا

رنگ جو خوشبو نہ تھا

(1781) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Rang Jo KHushbu Na Tha In Urdu By Famous Poet Balraj Komal. Rang Jo KHushbu Na Tha is written by Balraj Komal. Enjoy reading Rang Jo KHushbu Na Tha Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Balraj Komal. Free Dowlonad Rang Jo KHushbu Na Tha by Balraj Komal in PDF.