حیراں ہے جبیں آج کدھر سجدہ روا ہے

حیراں ہے جبیں آج کدھر سجدہ روا ہے

سر پر ہیں خداوند سر عرش خدا ہے

کب تک اسے سینچو گے تمنائے ثمر میں

یہ صبر کا پودا تو نہ پھولا نہ پھلا ہے

ملتا ہے خراج اس کو تری نان جویں سے

ہر بادشہ وقت ترے در کا گدا ہے

ہر ایک عقوبت سے ہے تلخی میں سوا تر

وہ رنگ جو ناکردہ گناہوں کی سزا ہے

احسان لیے کتنے مسیحا نفسوں کے

کیا کیجیے دل کا نہ جلا ہے نہ بجھا ہے

(871) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Hairan Hai Jabin Aaj Kidhar Sajda Rawa Hai In Urdu By Famous Poet Faiz Ahmad Faiz. Hairan Hai Jabin Aaj Kidhar Sajda Rawa Hai is written by Faiz Ahmad Faiz. Enjoy reading Hairan Hai Jabin Aaj Kidhar Sajda Rawa Hai Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Faiz Ahmad Faiz. Free Dowlonad Hairan Hai Jabin Aaj Kidhar Sajda Rawa Hai by Faiz Ahmad Faiz in PDF.