نہ اب رقیب نہ ناصح نہ غم گسار کوئی (ردیف .. ا)

نہ اب رقیب نہ ناصح نہ غم گسار کوئی

تم آشنا تھے تو تھیں آشنائیاں کیا کیا

جدا تھے ہم تو میسر تھیں قربتیں کتنی

بہم ہوئے تو پڑی ہیں جدائیاں کیا کیا

پہنچ کے در پہ ترے کتنے معتبر ٹھہرے

اگرچہ رہ میں ہوئیں جگ ہنسائیاں کیا کیا

ہم ایسے سادہ دلوں کی نیاز مندی سے

بتوں نے کی ہیں جہاں میں خدائیاں کیا کیا

ستم پہ خوش کبھی لطف و کرم سے رنجیدہ

سکھائیں تم نے ہمیں کج ادائیاں کیا کیا

(4378) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Na Ab Raqib Na Naseh Na Gham-gusar Koi In Urdu By Famous Poet Faiz Ahmad Faiz. Na Ab Raqib Na Naseh Na Gham-gusar Koi is written by Faiz Ahmad Faiz. Enjoy reading Na Ab Raqib Na Naseh Na Gham-gusar Koi Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Faiz Ahmad Faiz. Free Dowlonad Na Ab Raqib Na Naseh Na Gham-gusar Koi by Faiz Ahmad Faiz in PDF.