انتظار

گزر رہے ہیں شب و روز تم نہیں آتیں

ریاض زیست ہے آزردۂ بہار ابھی

مرے خیال کی دنیا ہے سوگوار ابھی

جو حسرتیں ترے غم کی کفیل ہیں پیاری

ابھی تلک مری تنہائیوں میں بستی ہیں

طویل راتیں ابھی تک طویل ہیں پیاری

اداس آنکھیں تری دید کو ترستی ہیں

بہار حسن پہ پابندیٔ جفا کب تک

یہ آزمائش صبر گریز پا کب تک

قسم تمہاری بہت غم اٹھا چکا ہوں میں

غلط تھا دعویٔ صبر و شکیب آ جاؤ

قرار خاطر بیتاب تھک گیا ہوں میں

(929) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Intizar In Urdu By Famous Poet Faiz Ahmad Faiz. Intizar is written by Faiz Ahmad Faiz. Enjoy reading Intizar Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Faiz Ahmad Faiz. Free Dowlonad Intizar by Faiz Ahmad Faiz in PDF.