باقی ہے کوئی ساتھ تو بس ایک اسی کا

باقی ہے کوئی ساتھ تو بس ایک اسی کا

پہلو میں لیے پھرتے ہیں جو درد کسی کا

اک عمر سے اس دھن میں کہ ابھرے کوئی خورشید

بیٹھے ہیں سہارا لیے شمع سحری کا

(293) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Baqi Hai Koi Sath To Bas Ek Usi Ka In Urdu By Famous Poet Faiz Ahmad Faiz. Baqi Hai Koi Sath To Bas Ek Usi Ka is written by Faiz Ahmad Faiz. Enjoy reading Baqi Hai Koi Sath To Bas Ek Usi Ka Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Faiz Ahmad Faiz. Free Dowlonad Baqi Hai Koi Sath To Bas Ek Usi Ka by Faiz Ahmad Faiz in PDF.