آئی خزاں چمن میں گئے دن بہار کے

آئی خزاں چمن میں گئے دن بہار کے

شرمندہ سب درخت ہیں کپڑے اتار کے

میک اپ سے چھپ سکیں گی خراشیں نہ وقت کی

آئینہ ساری باتیں کہے گا پکار کے

انساں سمٹتا جاتا ہے خود اپنی ذات میں

بندھن بھی کھلتے جاتے ہیں صدیوں کے پیار کے

پھر کیا کرے گا رہ کے کوئی تیرے شہر میں

راتیں ہی جب نصیب ہوں راتیں گزار کے

سوچا ہے اپنے زخموں کے آنگن میں بیٹھ کر

سجدے کروں گا نقش تمنا ابھار کے

تنہائیوں کا درد سمیٹے ہوئے کوئی

فرحتؔ چلا ہے ٹھوکریں دنیا کو مار کے

(363) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Aai KHizan Chaman Mein Gae Din Bahaar Ke In Urdu By Famous Poet Farhat Qadri. Aai KHizan Chaman Mein Gae Din Bahaar Ke is written by Farhat Qadri. Enjoy reading Aai KHizan Chaman Mein Gae Din Bahaar Ke Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Farhat Qadri. Free Dowlonad Aai KHizan Chaman Mein Gae Din Bahaar Ke by Farhat Qadri in PDF.