مجھے اندھیرے میں بے شک بٹھا دیا ہوتا

مجھے اندھیرے میں بے شک بٹھا دیا ہوتا

مگر چراغ کی صورت جلا دیا ہوتا

نہ روشنی کوئی آتی مرے تعاقب میں

جو اپنے آپ کو میں نے بجھا دیا ہوتا

یہ درد جسم کے یارب بہت شدید لگے

مجھے صلیب پہ دو پل سلا دیا ہوتا

یہ شکر ہے کہ مرے پاس تیرا غم تو رہا

وگرنہ زندگی نے تو رلا دیا ہوتا

(544) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Mujhe Andhere Mein Be-shak BiTha Diya Hota In Urdu By Famous Poet Gulzar. Mujhe Andhere Mein Be-shak BiTha Diya Hota is written by Gulzar. Enjoy reading Mujhe Andhere Mein Be-shak BiTha Diya Hota Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Gulzar. Free Dowlonad Mujhe Andhere Mein Be-shak BiTha Diya Hota by Gulzar in PDF.