لباس

میرے کپڑوں میں ٹنگا ہے

تیرا خوش رنگ لباس!

گھر پہ دھوتا ہوں ہر بار اسے اور سکھا کے پھر سے

اپنے ہاتھوں سے اسے استری کرتا ہوں مگر

استری کرنے سے جاتی نہیں شکنیں اس کی

اور دھونے سے گلے شکوؤں کے چکتے نہیں مٹتے!

زندگی کس قدر آساں ہوتی

رشتے گر ہوتے لباس

اور بدل لیتے قمیضوں کی طرح!

(740) ووٹ وصول ہوئے

Related Poetry

Your Thoughts and Comments

Libas In Urdu By Famous Poet Gulzar. Libas is written by Gulzar. Enjoy reading Libas Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Gulzar. Free Dowlonad Libas by Gulzar in PDF.