نظم

نظم الجھی ہوئی ہے سینے میں

مصرعے اٹکے ہوئے ہیں ہونٹوں پر

لفظ کاغذ پہ بیٹھتے ہی نہیں

اڑتے پھرتے ہیں تتلیوں کی طرح

کب سے بیٹھا ہوا ہوں میں جانم

سادہ کاغذ پہ لکھ کے نام ترا

بس ترا نام ہی مکمل ہے

اس سے بہتر بھی نظم کیا ہوگی!

(458) ووٹ وصول ہوئے

Related Poetry

Your Thoughts and Comments

Nazm In Urdu By Famous Poet Gulzar. Nazm is written by Gulzar. Enjoy reading Nazm Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Gulzar. Free Dowlonad Nazm by Gulzar in PDF.