ماورائے جہاں سے آئے ہیں

ماورائے جہاں سے آئے ہیں

آج ہم خمستاں سے آئے ہیں

اس قدر بے رخی سے بات نہ کر

دیکھ تو ہم کہاں سے آئے ہیں

ہم سے پوچھو چمن پہ کیا گزری

ہم گزر کر خزاں سے آئے ہیں

راستے کھو گئے ضیاؤں میں

یہ ستارے کہاں سے آئے ہیں

اس قدر تو برا نہیں جالبؔ

مل کے ہم اس جواں سے آئے ہیں

(636) ووٹ وصول ہوئے

Related Poetry

Your Thoughts and Comments

Mawara-e-jahan Se Aae Hain In Urdu By Famous Poet Habib Jalib. Mawara-e-jahan Se Aae Hain is written by Habib Jalib. Enjoy reading Mawara-e-jahan Se Aae Hain Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Habib Jalib. Free Dowlonad Mawara-e-jahan Se Aae Hain by Habib Jalib in PDF.