شعر سے شاعری سے ڈرتے ہیں

شعر سے شاعری سے ڈرتے ہیں

کم نظر روشنی سے ڈرتے ہیں

لوگ ڈرتے ہیں دشمنی سے تری

ہم تری دوستی سے ڈرتے ہیں

دہر میں آہ بے کساں کے سوا

اور ہم کب کسی سے ڈرتے ہیں

ہم کو غیروں سے ڈر نہیں لگتا

اپنے احباب ہی سے ڈرتے ہیں

داور حشر بخش دے شاید

ہاں مگر مولوی سے ڈرتے ہیں

روٹھتا ہے تو روٹھ جائے جہاں

ان کی ہم بے رخی سے ڈرتے ہیں

ہر قدم پر ہے محتسب جالبؔ

اب تو ہم چاندنی سے ڈرتے ہیں

(559) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Sher Se Shairi Se Darte Hain In Urdu By Famous Poet Habib Jalib. Sher Se Shairi Se Darte Hain is written by Habib Jalib. Enjoy reading Sher Se Shairi Se Darte Hain Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Habib Jalib. Free Dowlonad Sher Se Shairi Se Darte Hain by Habib Jalib in PDF.