اک بار پھر وطن میں گیا جا کے آ گیا

اک بار پھر وطن میں گیا جا کے آ گیا

لخت جگر کو خاک میں دفنا کے آ گیا

ہر ہم سفر پہ خضر کا دھوکا ہوا مجھے

آب بقا کی راہ سے کترا کے آ گیا

حور لحد نے چھین لیا تجھ کو اور میں

اپنا سا منہ لیے ہوئے شرما کے آ گیا

دل لے گیا مجھے تری تربت پہ بار بار

آواز دے کے بیٹھ کے اکتا کے آ گیا

رویا کہ تھا جہیز ترا واجب الادا

مینہ موتیوں کا قبر پہ برسا کے آ گیا

میری بساط کیا تھی حضور رضائے دوست

تنکا سا ایک سامنے دریا کے آ گیا

اب کے بھی راس آئی نہ حب وطن حفیظؔ

اب کے بھی ایک تیر قضا کھا کے آ گیا

(473) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Ek Bar Phir Watan Mein Gaya Ja Ke Aa Gaya In Urdu By Famous Poet Hafeez Jalandhari. Ek Bar Phir Watan Mein Gaya Ja Ke Aa Gaya is written by Hafeez Jalandhari. Enjoy reading Ek Bar Phir Watan Mein Gaya Ja Ke Aa Gaya Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Hafeez Jalandhari. Free Dowlonad Ek Bar Phir Watan Mein Gaya Ja Ke Aa Gaya by Hafeez Jalandhari in PDF.