جب بھی بادل بارش لائے شوق جزیروں سے

جب بھی بادل بارش لائے شوق جزیروں سے

خوشہ خوشہ حرف کی بیلیں بھر گئیں ہیروں سے

تم سے ملے تو شہر تمنا کتنا پھیل گیا

کیا کیا خواب نئے تعمیر ہوئے تعبیروں سے

آنکھیں رنگوں کی برساتیں تک تک جھیل ہوئیں

دل نے کیا کیا عکس کشید کئے تصویروں سے

اس کو چھونے کی خواہش نے ہاتھ بڑھائے تو

پھن پھیلائے نکلے کتنے سانپ لکیروں سے

عالؔی دانش کی بستی میں اب سردار وہی

ڈھونڈ نکالے کچھ اندھیارے جو تنویروں سے

(406) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Jab Bhi Baadal Barish Lae Shauq-jaziron Se In Urdu By Famous Poet Jaleel 'Aali'. Jab Bhi Baadal Barish Lae Shauq-jaziron Se is written by Jaleel 'Aali'. Enjoy reading Jab Bhi Baadal Barish Lae Shauq-jaziron Se Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jaleel 'Aali'. Free Dowlonad Jab Bhi Baadal Barish Lae Shauq-jaziron Se by Jaleel 'Aali' in PDF.