دل ہے اپنا نہ اب جگر اپنا

دل ہے اپنا نہ اب جگر اپنا

کر گئی کام وہ نظر اپنا

اب تو دونوں کی ایک حالت ہے

دل سنبھالوں کہ میں جگر اپنا

میں ہوں گو بے خبر زمانے سے

دل ہے پہلو میں با خبر اپنا

دل میں آئے تھے سیر کرنے کو

رہ پڑے وہ سمجھ کے گھر اپنا

تھا بڑا معرکہ محبت کا

سر کیا میں نے دے کے سر اپنا

اشک باری نہیں یہ در پردہ

حال کہتی ہے چشم تر اپنا

کیا اثر تھا نگاہ ساقی میں

نشہ اترا نہ عمر بھر اپنا

چارہ گر دے مجھے دوا ایسی

درد ہو جائے چارہ گر اپنا

وضع داری کی شان ہے یہ جلیلؔ

رنگ بدلا نہ عمر بھر اپنا

(337) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Dil Hai Apna Na Ab Jigar Apna In Urdu By Famous Poet Jaleel Manikpuri. Dil Hai Apna Na Ab Jigar Apna is written by Jaleel Manikpuri. Enjoy reading Dil Hai Apna Na Ab Jigar Apna Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jaleel Manikpuri. Free Dowlonad Dil Hai Apna Na Ab Jigar Apna by Jaleel Manikpuri in PDF.