آدمی وقت پر گیا ہوگا

آدمی وقت پر گیا ہوگا

وقت پہلے گزر گیا ہوگا

وہ ہماری طرف نہ دیکھ کے بھی

کوئی احسان دھر گیا ہوگا

خود سے مایوس ہو کے بیٹھا ہوں

آج ہر شخص مر گیا ہوگا

شام تیرے دیار میں آخر

کوئی تو اپنے گھر گیا ہوگا

مرہم ہجر تھا عجب اکسیر

اب تو ہر زخم بھر گیا ہوگا

(278) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Aadmi Waqt Par Gaya Hoga In Urdu By Famous Poet Jaun Eliya. Aadmi Waqt Par Gaya Hoga is written by Jaun Eliya. Enjoy reading Aadmi Waqt Par Gaya Hoga Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jaun Eliya. Free Dowlonad Aadmi Waqt Par Gaya Hoga by Jaun Eliya in PDF.