دل نے وفا کے نام پر کار وفا نہیں کیا

دل نے وفا کے نام پر کار وفا نہیں کیا

خود کو ہلاک کر لیا خود کو فدا نہیں کیا

خیرہ سران شوق کا کوئی نہیں ہے جنبہ دار

شہر میں اس گروہ نے کس کو خفا نہیں کیا

جو بھی ہو تم پہ معترض اس کو یہی جواب دو

آپ بہت شریف ہیں آپ نے کیا نہیں کیا

نسبت علم ہے بہت حاکم وقت کو عزیز

اس نے تو کار جہل بھی بے علما نہیں کیا

جس کو بھی شیخ و شاہ نے حکم خدا دیا قرار

ہم نے نہیں کیا وہ کام ہاں بہ خدا نہیں کیا

(1311) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Dil Ne Wafa Ke Nam Par Kar-e-wafa Nahin Kiya In Urdu By Famous Poet Jaun Eliya. Dil Ne Wafa Ke Nam Par Kar-e-wafa Nahin Kiya is written by Jaun Eliya. Enjoy reading Dil Ne Wafa Ke Nam Par Kar-e-wafa Nahin Kiya Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jaun Eliya. Free Dowlonad Dil Ne Wafa Ke Nam Par Kar-e-wafa Nahin Kiya by Jaun Eliya in PDF.