غم ہے بے ماجرا کئی دن سے

غم ہے بے ماجرا کئی دن سے

جی نہیں لگ رہا کئی دن سے

بے شمیم و ملال و حیراں ہے

خیمہ گاہ صبا کئی دن سے

دل محلے کی اس گلی میں بھلا

کیوں نہیں گل مچا کئی دن سے

وہ جو خوشبو ہے اس کے قاصد کو

میں نہیں مل سکا کئی دن سے

اس سے بھی اور اپنے آپ سے بھی

ہم ہیں بے واسطہ کئی دن سے

(1258) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Gham Hai Be-majra Kai Din Se In Urdu By Famous Poet Jaun Eliya. Gham Hai Be-majra Kai Din Se is written by Jaun Eliya. Enjoy reading Gham Hai Be-majra Kai Din Se Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jaun Eliya. Free Dowlonad Gham Hai Be-majra Kai Din Se by Jaun Eliya in PDF.