''میرا آنگن میرا پیڑ''

میرا آنگن

کتنا کشادہ کتنا بڑا تھا

جس میں

میرے سارے کھیل

سما جاتے تھے

اور آنگن کے آگے تھا وہ پیڑ کہ جو مجھ سے کافی اونچا تھا

لیکن

مجھ کو اس کا یقیں تھا

جب میں بڑا ہو جاؤں گا

اس پیڑ کی پھنگی بھی چھو لوں گا

برسوں بعد

میں گھر لوٹا ہوں

دیکھ رہا ہوں

یہ آنگن

کتنا چھوٹا ہے

پیڑ مگر پہلے سے بھی تھوڑا اونچا ہے

(207) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Mera Aangan Mera PeD In Urdu By Famous Poet Javed Akhtar. Mera Aangan Mera PeD is written by Javed Akhtar. Enjoy reading Mera Aangan Mera PeD Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Javed Akhtar. Free Dowlonad Mera Aangan Mera PeD by Javed Akhtar in PDF.