جب میں نے کہا اے بت خودکام ورے آ

جب میں نے کہا اے بت خودکام ورے آ

تب کہنے لگا ''چل بے او بد نام پرے جا''

ہے صبح سے عاشق کا ترے حال نپٹ تنگ

معلوم یہ ہوتا ہے کہ تا شام مرے گا

ناصح مرے رونے کا نہ مانع ہو کہ عاشق

گر یہ نہ کرے کام تو پھر کام کرے کیا

آتا ہے گر اس ابر میں اے ساقیٔ گلفام

تو بادۂ گل رنگ سے تو جام بھرے لا

یاں زیست کا خطرہ نہیں ہاں کھینچیے تلوار

وہ غیر تھا جو دیکھ کے صمصام ڈرے تھا

میں نے جو کہا ایک تو بوسہ تو مجھے دے

بولا وہ ''زباں اپنی کو تو تھام ارے ہا!''

گر دیدہ و دل فرش کروں راہ میں جرأتؔ

ممکن ہی نہیں جو وہ دلآرام دھرے پا

(660) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Jab Maine Kaha Ai But-e-KHud-kaam Ware Aa In Urdu By Famous Poet Jurat Qalandar Bakhsh. Jab Maine Kaha Ai But-e-KHud-kaam Ware Aa is written by Jurat Qalandar Bakhsh. Enjoy reading Jab Maine Kaha Ai But-e-KHud-kaam Ware Aa Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Jurat Qalandar Bakhsh. Free Dowlonad Jab Maine Kaha Ai But-e-KHud-kaam Ware Aa by Jurat Qalandar Bakhsh in PDF.