میں بے نوا اڑا تھا بوسے کو ان لبوں کے

میں بے نوا اڑا تھا بوسے کو ان لبوں کے

ہر دم صدا یہی تھی دے گزرو ٹال کیا ہے

پر چپ ہی لگ گئی جب ان نے کہا کہ کوئی

پوچھو تو شاہ جی سے ان کا سوال کیا ہے

(1009) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Main Be-nawa UDa Tha Bose Ko Un Labon Ke In Urdu By Famous Poet Mir Taqi Mir. Main Be-nawa UDa Tha Bose Ko Un Labon Ke is written by Mir Taqi Mir. Enjoy reading Main Be-nawa UDa Tha Bose Ko Un Labon Ke Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Mir Taqi Mir. Free Dowlonad Main Be-nawa UDa Tha Bose Ko Un Labon Ke by Mir Taqi Mir in PDF.