کو عمر کہ اب فکر امیری کریے

کو عمر کہ اب فکر امیری کریے

بن آوے تو اندیشۂ پیری کریے

آگے مرنے سے خاک ہوجے اے میرؔ

یعنی کہ کوئی روز فقیری کریے

(278) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

In Urdu By Famous Poet Mir Taqi Mir. is written by Mir Taqi Mir. Enjoy reading  Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Mir Taqi Mir. Free Dowlonad  by Mir Taqi Mir in PDF.