آنکھوں میں چبھ گئیں تری یادوں کی کرچیاں (ردیف .. ے)

آنکھوں میں چبھ گئیں تری یادوں کی کرچیاں

کاندھوں پہ غم کی شال ہے اور چاند رات ہے

دل توڑ کے خموش نظاروں کا کیا ملا

شبنم کا یہ سوال ہے اور چاند رات ہے

کیمپس کی نہر پر ہے ترا ہاتھ ہاتھ میں

موسم بھی لا زوال ہے اور چاند رات ہے

ہر اک کلی نے اوڑھ لیا ماتمی لباس

ہر پھول پر ملال ہے اور چاند رات ہے

چھلکا سا پڑ رہا ہے وصیؔ وحشتوں کا رنگ

ہر چیز پہ زوال ہے اور چاند رات ہے

(434) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

In Urdu By Famous Poet Wasi Shah. is written by Wasi Shah. Enjoy reading  Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Wasi Shah. Free Dowlonad  by Wasi Shah in PDF.