موجوں کی سازشوں نے کنارہ نہیں دیا

موجوں کی سازشوں نے کنارہ نہیں دیا

تنکے نے ڈوبتے کو سہارا نہیں دیا

اس نے بھی میرا حال نہ پوچھا کسی بھی وقت

میں نے بھی اس کو کوئی اشارہ نہیں دیا

اس رات کو سیاہ بتانے میں کیا گریز

پلکوں پہ جس نے کوئی ستارہ نہیں دیا

تاریخ لکھ رہی تھی نئے سر کی داستان

لیکن سناں نے نام ہمارا نہیں دیا

مدت سے ایسے خواب میں الجھے ہوئے ہیں لوگ

جس نے حقیقتوں میں نظارہ نہیں دیا

(1000) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Maujon Ki Sazishon Ne Kinara Nahin Diya In Urdu By Famous Poet Wafa Naqvi. Maujon Ki Sazishon Ne Kinara Nahin Diya is written by Wafa Naqvi. Enjoy reading Maujon Ki Sazishon Ne Kinara Nahin Diya Poem on Inspiration for Students, Youth, Girls and Boys by Wafa Naqvi. Free Dowlonad Maujon Ki Sazishon Ne Kinara Nahin Diya by Wafa Naqvi in PDF.